سینٹر آف اسلام سائنس (عقل والوں کے لیے)

لوگ اللہ تک کیوں نہیں پہنچ پاتے

تحریر: محمد نوح (www.CoislamScience.com)

غیر مسلم کا اللہ تک پہنچنے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا کیونکہ اللہ تک پہنچنے میں سب سے بڑی روکاوٹ اور حجاب مسلمان کا اپنا عقیدہ ہے ۔مسلمان ایک عقیدہ اپناکر اسی پر اعتماد کرکے بیٹھ جاتا ہے ۔اگر یہ عقیدہ اسے علم و دلائل کے تحت حاصل ہوا تو پھر بہت ہی مشکل ہوتا ہے کہ وہ اس عقیدے کو چھوڑ سکے۔پھر یہی عقیدہ زندگی بھر اس کا یقین رہتا ہے خواہ وہ باطل ہی کیوں نہ ہو۔کیونکہ وہ اپنے عقیدے پر یقین کرکے بیٹھ جاتا ہے اور عمل، تجربہ اور نتیجہ کے میدان میں اتر ہی نہیں پاتا۔اسی لئے دین اسلام کے وہ حقائق جو علم الیقین سے عین الیقین اور پھر حق الیقین تک لے کر جاتے ہیں اس کیلئے کوئی معنی نہیں رکھتے۔یہ بہت سخت نقصان ہے۔ایسے علم والوں کیلئے اسلام صرف زبانی کلامی اور چند مخصوص اعمال کا مجموعہ رہتا ہے جو کہ درحقیقت ایسا ہی ہے جیسا کہ دوسرے مذاہب ۔اس لئے کتابوں کے سہارے لفاظی کرنے والے اکثر مسلمان اور علماء کبھی بھی کسی غیر مسلم کو یقین کامل نہیں دلواسکتے ۔جب صحیح علم کے ساتھ صحیح عمل نہ کیا جائے تو تجربہ حاصل نہیں ہوتا اور جب تجربہ ہی نہیں تو حقیقی یقین بھی حاصل نہیں ملتا۔لہذا منزل تک رسائی ناممکن ہوتی ہے۔


Home | About