سینٹر آف اسلام سائنس (عقل والوں کے لیے)

مسلمان الحاد کے مقابلے میں کمزور اور ناکام کیوں ہیں

تحریر: محمد نوح (www.CoislamScience.com)

ایک مسلمان صاحب فیس بک پر کہہ رہے تھے کہ ’جر من ملحدتھیوڈونولڈیکے کا یہ اشکال کہ (معاذاللہ) قرآن اللہ کا کلام نہیں تھا بلکہ محمدصلی اللہ علیہ وسلم نے خود بنایا تھا بالکل لغو ہے۔اس کے خلاف اچھے خاصے قرآئن موجود ہیں۔‘ اس کے بعد انہوں نے کچھ واقعات پیش کرکے مثالیں دیں۔جس پر بہت سے مسلمانوں نے ملحدوں کا مذاق اڑایا اور انہیں بے وقوف سمجھا۔
ایسے کئی مسلمانوں کی تحریریں میں پڑھتا دیکھتا رہتا ہوں۔یہاں تک کہ ایک مشہور و معروف مسلم اسکالر سے ہزاروں لوگوں کے سامنے جب کسی ملحد نے سوال کیا مثلاً کہ ’اللہ نظر کیوں نہیں آتا ، باتیں کیوں نہیں کرتا، ساتھ کیوں محسوس نہیں ہوتا وغیرہ‘ (یعنی وہ ملحد چاہتا تھا کہ اسے اللہ کا وجود ثابت کیا جائے ) تو وہ اسکالر اسے مطمئن کرنے میں میری نظر میں ناکام ہوئے۔کیونکہ ملحد اپنے اطمینان کیلئے اللہ کے وجود پر ثبوت چاہتا تھا جبکہ اسکالر صاحب قرآن کی آیات اور منطق سے اسے مطمئن کرنے میں لگے رہے ۔ظاہر ہے وہ ملحد زیادہ بات نہیں کرسکا کیونکہ اسے موقع نہیں دیا گیا (جبکہ وہ شک میں گرفتار رہا)۔
میں اپنے مسلمان بھائیوں اور بہنوں سے کچھ کہنا چاہتا ہوں کہ ہم مسلمان اپنے آپ کو جھوٹی تسلی دے سکتے ہیں مگر چونکہ اپنی گلی میں کتا بھی شیر ہوتا ہے اس لئے ہم اپنے حلقہ احباب میں غیر مسلموں کو دین اسلام کیلئے مطمئن کرنے کی حقیقی کوشش کئے بغیر جتنا مرضی برا بھلا کہتے یا سمجھتے رہیں وہ فضول ہے۔اسی طر ح ہندو ، عیسائی وغیرہ بھی مسلمانوں کیلئے بہت سی باتیں کرتے ہیں مگر حقیقت یہ ہے کہ وہ بھی مسلمانوں کی طرح یہی چاہتے ہیں کہ ان کی باتوں کوبھی سچا مان کر ان کا مذہب قبول کرلیا جائے۔
ہم یہ کیوںبھول جاتے ہیں کہ پرانے وقتوں میں یہ باتیں مناظرے اور بحث میں اچھی لگتی تھیں مگر یہ سائنس و ٹیکنالوجی کا دور ہے۔اربوں انسان اپنے اپنے مذاہب کے معاملے پر شک میں گرفتار ہیں۔الحاد بھی تیزی سے پھیل رہا ہے۔بہت سے مذاہب کی جڑ یں اکھڑ رہی ہیں۔لوگ سوالات اٹھاتے ہیں مگر مطمئن نہیں ہوتے۔چند لوگ اگر مسلمان سے ہندو ہوجائیں یا عیسائیت چھوڑ کر مسلمان ہوجائیں تو کیا یہ بہت بڑ ا کام ہوگیا جبکہ دنیا میں پانچ ارب انسان کافروملحد ہیں؟
اب آپ صرف کہانیاں سناکر یقین نہیں کرواسکتے۔آپ کو دکھانا پڑے گا، منوانا پڑے گا، آپ کو ثابت کرنا پڑے گا۔ ہم مسلمان پیدا ہوگئے تو یہ کمال نہیں۔ہم ہندو یا عیسائی گھرانے میں پیدا ہوتے یا ملحد تو ہمارے لئے بھی قرآن کی اہمیت نہ ہوتی۔تو یہ ذمہ داری ہم مسلمانوں پر بنتی ہے کہ ہم جس اللہ کی قدرت کے دعوے کرتے ہیں اس کا کوئی عملی ثبوت پیش کریں۔جس نبی کو سچا کہتے ہیں ان کی سچائی پر کوئی عملی ثبوت پیش کریں۔جس دین کو سچا کہتے ہیں اس دین کی سچائی پر عملی ثبوت پیش کریں۔جس قرآن کو کلام الٰہی کہتے ہیں اس کی سچائی پر کوئی عملی ثبوت پیش کریں۔
مثال کے طور پر ملحدوں کے نزدیک قرآن اللہ کا کلام ہے ہی نہیں۔وہ اسے سچا نہیں مانتے۔تو۔۔۔
۱) جب ملحد وںکیلئے قرآن ہی سچا نہیں تو وہ مسلمانوں کی دیگر کتابوں پر کیوں کریقین کرلیں؟سب باتیں کتابوں کی باتیں ہی ہیں۔اس لئے بطور ثبوت قابل قبول نہیں ہوسکتیںورنہ دیگر مذاہب میں بھی بہت قصے کہانیاں موجود ہیں۔
۲) قرآنی آیات سے ملحدوں کو یقین دلانے کی کوشش کرنا ایسا ہی ہے جیسے ریاضی کے پرچے میں غالب کے اشعار سے استدلال کرنا۔ جس چیز کو کوئی مانتا ہی نہیں اسے اپنے موقف کیلئے اسی سے دلائل دے کر نتیجہ کی امید رکھنا استہزائی طریقہ ہے اور جب ملحدقرآنی آیات پر یقین نہیں کرتے تو ان کا مذاق اڑاناہم مسلمانوں کا انتہائی نامعقول سلوک ہے۔حقیقت یہ ہے کہ ہم ملحدوں کے سامنے محمدصلی اللہ علیہ وسلم کو سچا ثابت کرنے میں ناکام ہیں۔ہم چاہتے ہیں کہ بس ہماری باتیں سن کر وہ فوراً ایمان لے آئیں ورنہ بے شک جہنم میں جائیں۔
۳) اگر کوئی ملحد اپنے اصولوںکی روشنی میں خدا کے انکار پردلائل لائے گا تو آپ اسے سورہ اخلاص سناکر قائل نہیں کرسکتے۔اس کیلئے آپ کواسی کی زبان اور اصولوں کو بطور ہتھیار و دلیل استعمال کرنا ہوگا۔
آخر میں ایک سوال پوچھتا ہوں کہ کیا کوئی بھی مسلمان جذباتی پن اختیار کرنے کے بجائے مجھے کوئی ایک ناقابل شکست ثبوت پیش کرسکتا ہے جس سے محمدصلی اللہ علیہ وسلم کو سچا اور آخری نبی ثابت کیا جاسکے؟
اگر مسلمان ثبوت نہیں دے سکتے تو پھر ملحد بھی اپنی جگہ اپنے دعوے میں صحیح ہیںکہ انہیں معجزہ اورثبوت دیکھایا جائے۔
اس لئے میں مسلمانوں سے صرف اتنا کہوں گا کہ یا تو ایسے ثبوت مہیا کریں اور اگر ایسا کرنے میں عاجز ہیں تو پھر ہمارے ناقابل شکست ثبوتوں کو بطور ہتھیار استعمال کریں اور دنیا بھر کے ملحدوں نیزغیر مسلموں تک پہنچانا شروع کریں تاکہ وہ مسلمان ہوسکیں۔ اگر آپ مسلمان ایسا نہیں کرتے تو پھر اپنا فضول رونہ دھونا بند کریں کیونکہ آپ بے بصیرت اور احمق ہیں۔


Home | About